• Saturday, February 6, 2016

    عبداللہ امانت محمدی کے اقوال دوسری قسط

    • لوگوں کو گالیوں کی بجائے دعائیں دو کیونکہ ہدایت گالیوں سے نہیں دعاؤں سے ملتی ہے۔
    • اچھی بات کرنے والا نہ کرنے والے سے بہتر ہے اور بری بات کرنے والا نہ کرنے والے سے بد تر ہے۔
    • جو فائدہ سمجھنے کا ہے وہ یاد کرنے کا نہیں۔
    • اصلاح کرنے پر بے وقوف ہی برا مانتے ہیں۔
    • کسی بڑے شخص کی خامی ، خامی ہوتی ہے اچھائی نہیں۔
    • برائی میموری کے ساتھ ساتھ مائنڈ سے بھی نکالو !
    • جاہل سے بحث جہالت ہے۔
    • کوئی آپ کے سامنے غلط بات کرنے سے کترائے تو سمجھ لو کہ آپ پر اللہ پاک کی خاص رحمت ہے۔
    • زیادتی کرنے والے کے ساتھ زیادتی ہو کر رہتی ہے۔
    • جو کہتا ہے کہ :"میرے والدین نے میرے لیے کچھ نہیں بنایا وہ جھوٹ بولتا ہے۔"
    • علم اتنا آسان کہ آپ چند حرفوں سے ہزاروں لفظ بنا سکتے ہو۔
    • جو دوسروں کو بے وقوف بنانے کی کوشش کرتا ہے سب اسے بے وقوف سمجھتے ہیں۔
    • جو بے ایمانی سے امیر بن سکتا ہے وہ ایمانداری سے امیر ترین بن سکتا ہے۔
    • اگر موت کے بعد زندگی نہ ہوتی تو شاید میں دنیا کا بد ترین شخص ہوتا۔
    • برے کو نہیں برائی کو ختم کرو۔
    • اپنی اصلاح کرو کسی کے اصلاح کرنے سے پہلے۔
    • کاہلی ناکامی کی پہلی سیڑھی ہے۔
    • صدقہ امیر بننے کا شارٹ کٹ راستہ ہے۔
    • بیویاں پیار کے لیے ہیں مار کے لیے نہیں۔
    • جو آپ کے سامنے دوسروں کی خامیاں بیان کرتا ہے وہ یقیناًدوسروں کے سامنے آپ کی خامیاں بیان کرتا ہو گا۔
    • عبادت روح کی غذا و دوا ہے۔
    • کسی میں کوئی خوبی دیکھنا چاہتے ہو تو اسے کہو :"تم میں یہ خوبی اچھی لگتی ہے۔"
    • اللہ کی طرف بلانے میں شرمندگی کی بجائے خوشی محسوس کرو۔
    • ہر شخص کو ترقی کا موقع ملتا ہے لیکن عقل مند ہی اس سے فائدہ اٹھاتے ہیں۔